پاکستانی سپریم کورٹ کا کھوکھر برادران کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم

پاکستانی سپریم کورٹ نے مسلم لیگ نون کے ایم این اے افضل کھوکھر اور ایم پی اے سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی سپریم کورٹ  نے مسلم لیگ نون کے ایم این اے افضل کھوکھر اور ایم پی اے سیف الملوک کھوکھر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دے دیا ہے۔ پاکستانی سپریم کورٹ نے لاہور رجسٹری میں ٹائون شپ، جوہر ٹاؤن و دیگرعلاقوں میں قبضوں پر از خود نوٹس کی سماعت کی۔ عدالت عظمیٰ نےنون  لیگی ایم این اے افضل کھوکھر اور ایم پی اے سیف الملوک کھوکھر پر سخت اظہار برہمی کرتے ہوئے کھوکھر برادران کو اپنے اور اہل خانہ کے نام تمام جائیداد کی تفصیلات جمع کرانے کا حکم دیا۔ چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ بہتر ہے کہ جتنی بیواؤ ں اور اوورسیز پاکستانیوں کی جائیدادوں پر قبضے کیے گئے وہ خود ہی چھوڑ دو۔ ایم پی اے سیف الملوک کھوکھر نے کہا کہ ہم نےکسی کی جائیداد پر قبضہ نہیں کیا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ اگر قبضہ نکل آیا تو میں چھوڑوں گا نہیں، سب جانتے ہیں میں جو کہتا ہوں وہ کر کے بھی دکھاتا ہوں، اپنی ایم پی اے شپ کا رسک نہ لیں تو بہتر ہے۔ انہوں نے ایل ڈی اے اور پولیس کو کھوکھر برادران سے قبضہ فوری چھڑانے کا حکم دیا۔

چیف جسٹس پاکستان نے عدالت میں اپنا موبائل نکال کر کھوکھر برادران کے خلاف شکایات کا انکشاف کیا اور ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بیواؤں اور یتیموں کی آپ کے خلاف ہمارے پاس بے شمار شکایات آ رہی ہیں، کسی بھی بیوہ اور یتیم کی جائیداد پر قبضہ کرنے والے کو چھوڑ نہیں سکتے۔ عدالت نے پولیس اور ایل ڈی اے کو کھوکھر برادران کے قبضوں کے خلاف کھلی کچہریاں لگانے کا حکم دیا ۔

News Code 1886479

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 4 =