پاکستان نے مذہبی آزادی کے حوالے سے امریکی رپورٹ مسترد کردی

پاکستان نے مذہبی آزادی کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ کے بیان اور رپورٹ کو مسترد کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی وزارت خارجہ نے مذہبی آزادی  کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ کے بیان  اور رپورٹ کو مسترد کردیا ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان نے امریکی محکمہ خارجہ کا مذہبی آزادیوں کی رپورٹ سے متعلق بیان مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جیوری کی ساکھ اورغیرجانبداری پر سنجیدہ سوالات موجود ہیں کیونکہ پاکستان ایک کثیرمذہبی معاشرہ ہے جہاں مختلف مذاہب کے لوگ ساتھ رہتے ہیں۔

ترجمان دفترخارجہ کے بیان کے مطابق پاکستان کی آبادی میں 4 فیصد مسیحی، ہندو، بدھ اورسکھ ہیں، اقلیتوں سے مساوی سلوک اورحقوق کی فراہمی آئین کی اساس ہے، اقلیتوں کوقانون سازی کے عمل میں شریک کرنے کیلئے مخصوص نشستیں رکھی گئی ہیں جب کہ اقلیتوں کے مذہبی مقامات اور جائیدادوں کے تحفظ کیلئے عدلیہ نے تاریخی فیصلے کئے ہیں۔ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ امریکہ کو اپنے ملک میں بڑھتے ہوئے اسلام فوبیا کی وجوہات تلاش کرنے کی ضرورت ہے۔

News Code 1886383

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 14 =