پاکستان کے نیب ادارے میں  سابق ریلوے وزير اور اس کے بھائی کو گرفتار کرلیا

پاکستان میں لاہور ہائیکورٹ نے سابق ریلوے وزير خواجہ سعدرفیق اوراور اس کے بھائی سلمان رفیق کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد کردی جس کے بعد نیب نے خواجہ برادران کو حراست میں لےلیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں لاہور ہائیکورٹ نے سابق ریلوے وزير  خواجہ سعدرفیق اوراور اس کے بھائی سلمان رفیق کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد کردی جس کے بعد نیب نے خواجہ برادران کو حراست میں لےلیا ہے۔ خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق کے خلاف قومی احتساب بیورو (نیب) کی تین رکنی تحقیقاتی ٹیم پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی میں مبینہ طور پر کی جانے والی کرپشن کی تحقیقات کر رہی ہے۔ نیب نے دونوں بھائیوں کو پیرا گون ہاؤسنگ اسکینڈل کی تحقیقات کے سلسلے میں پوچھ گچھ کے لیے کئی بار طلب بھی کیا ہے۔دونوں بھائیوں نے نیب کی جانب سے ممکنہ گرفتاری کے پیش نظر لاہور ہائیکورٹ سے عبوری ضمانت لے رکھی تھی۔ ترجمان نیب کا کہنا ہے پیراگون سٹی کرپشن کیس میں ضمانت قبل از گرفتاری خارج ہونے پر خواجہ برادران کو گرفتارکیا گیا۔ ترجمان نے یہ بھی بتایا کہ عدالتی فیصلے سے نیب کے ملزمان کیخلاف معقول شواہد پیش کرنیکی تصدیق ہوئی۔نیب نےخواجہ سعد رفیق کی گرفتاری سےمتعلق اسپیکر قومی اسمبلی سےرابطہ کر لیا۔قبل از گرفتاری درخواست ضمانت میں توسیع کے لیے خواجہ برادران آج لاہور ہائیکورٹ میں پیش ہوئے، جہاں جسٹس طارق عباسی کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے درخواست پر سماعت کی۔سماعت کے بعد عدالت نے خواجہ برادران کی درخواست ضمانت مسترد کردی۔

News Code 1886366

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 6 =