چینی قونصل خانے پر حملہ کرنے والے دہشتگردوں کا تعلق  بلوچستان سے تھا

پاکستان کے صوبہ سندھ کے وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں چینی قونصل خانے پر حملہ کرنے والے دہشتگرد بلوچستان سے آئے تھے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکسپریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے صوبہ سندھ کے وزیر اعلیٰ  سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں  چینی قونصل خانے پر حملہ کرنے والے دہشتگرد بلوچستان سے آئے تھے۔

اطلاعات کے مطابق کراچی میں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے چینی سفیر یاؤ جنگ نے ملاقات کی، اس موقع پر چین کے قونصل جنرل وانگ یو، چیف سیکریٹری سندھ ممتاز شاہ، آئی جی ڈاکٹر کلیم امام اور پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو بھی موجود تھے۔

چینی سفیر نے کہا کہ ہماری یہ ملاقات کل کراچی میں چائنیز قونصل خانے پر ہونے والے حملے کے دوسرے دن ہو رہی ہے، کل یہ واقعہ پیش آیا اور آج میں آپ سے ملنے آیا ہوں، میں آپ کا شکرگزار ہوں کہ آپ نے فوری ہم سب سے رابطہ کیا اور حملے کو ناکام بنایا۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ چینی ہمارے بھائی ہیں، آپ کی سکیورٹی ہمارے لیے بہت اہم ہے، اس واقعے کے بعد میں نے فوری چائنیز قونصل خانے کا دورہ کیا، اس کے بعد امن و امان پر اجلاس کیا، میں نے قونصل خانے کی سکیورٹی آڈٹ کی ہدایت کی ہے، قونصل خانے پر ڈیوٹی دینے والے تمام اہلکاروں کو بلٹ پروف جیکٹس دیں گے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ حملہ کرنے والے دہشتگرد بلوچستان سے آئے تھے، اس حوالے سے میں نے وزیراعلی بلوچستان سے بھی بات کی ہے ہم مل کر سندھ۔ بلوچستان بارڈر پر مزید سخت چیکنگ کا انتظام کریں گے۔

News Code 1885894

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 15 =