پاکستان کی قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی

پاکستان کی قومی اسمبلی کے اسپیکر کے انتخاب کے بعد قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے دوران مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے ارکان ایک دوسرے کے آمنے سامنے آگئے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی قومی اسمبلی کے اسپیکر کے انتخاب کے بعد قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے دوران مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے ارکان ایک دوسرے کے آمنے سامنے آگئے۔  پاکستان قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران جیسے ہی سردار ایاز صادق نے نئے اسپیکر اسد قیصر کی کامیابی کا اعلان کیا تو مسلم لیگ (ن) کی جانب سے احتجاج شروع ہوگیا۔ نواز شریف کی تصاویر اٹھائے (ن) لیگی اراکین اسپیکر کے ڈائس کے سامنے آکر ’ووٹ کو عزت دو‘ اور ’جعلی مینڈیٹ نا منظور‘ کے نعرے لگانے لگے۔ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے رانا ثنا اللہ، شیزہ فاطمہ اور مریم اورنگزیب احتجاج میں پیش تھیں، مسلم لیگ (ن) کے ارکان کے نعروں ہی کی گونج میں اسپیکر نے اپنے عہدے کا حلف لیا۔ اس دوران تحریک انصاف کے رکن بھی میدان میں آگئے جب کہ پی ٹی آئی کے عامر لیاقت احتجاجی ارکان کے درمیان بیچ بچاؤ کراتے رہے۔

حالات کو دیکھتے ہوئے اسپیکر نے ایوان کی کارروائی کو کچھ دیر کے لیے ملتوی کردیا، ادھر پاکستان پیپلز پارٹی کے ارکان ایوان میں آرام سے بیٹھے رہے۔

News Code 1883095

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 6 =