ڈونلڈ ٹرمپ  ایک بار پھر صحافیوں سے الجھ پڑے

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کورونا وائرس پر بریفنگ کے دوران ایک بار پھر صحافیوں سے الجھ پڑے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کورونا وائرس پر بریفنگ کے دوران ایک بار پھر صحافیوں سے الجھ پڑے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بریفنگ میں کہا کہ ٹیسٹنگ کے معاملے میں امریکہ سب سے آگے ہے۔تین ہفتے پہلے ہم روزانہ کی بنیاد پر تقریباً ایک لاکھ پچاس ہزار ٹیسٹ کر رہے تھے۔اب ہم روزانہ تقریباً تین لاکھ ٹیسٹ کر رہے ہیں۔ یہ سو فیصد اضافہ ہے اور اس تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔اس دوران ایک چینی نژاد خاتون رپورٹر صدر ٹرمپ سے امریکہ میں بڑھتی ہوئی ہلاکتوں پر سوال پوچھا تو ٹرمپ غصے میں آگئے اور سارا نزلہ  چین پر گرا دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پوری دنیا میں لوگ کورونا وائرس سے ہلاک ہو رہے ہیں۔ان کے خیال میں آپ کو یہ سوال چین سے کرنا چاہیے۔ان کی بجائے یہ سوال چین سے کریں۔جب آپ چین سے یہی سوال کریں گی تو شایدآپ کو انتہائی غیر معمولی جواب ملے گا۔ اس موقع پر صدر ٹرمپ ایک اور رپورٹر سے بھی الجھ پڑے اور بریفنگ کو ادھورا چھوڑ کر چلے گئے۔

News Code 1900146

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 15 =