روس نے شام میں ترکی سے منسلک سرحد میں 300 فوجی بھیج دیئے

روس نے شام میں ترکی سے منسلک سرحد میں نگرانی کے لیے 300 ملیٹری پولیس پہنچا دیئے جو شہریوں کی سکیورٹی کے ساتھ ساتھ کرد ملیشیا کو 30 کلومیٹر کا علاقہ خالی کرنے میں بھی تعاون کریں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ روس نے شام میں ترکی سے منسلک سرحد میں نگرانی کے لیے 300 ملیٹری پولیس پہنچا دیئے جو شہریوں کی سکیورٹی کے ساتھ ساتھ کرد ملیشیا کو 30 کلومیٹر کا علاقہ خالی کرنے میں بھی تعاون کریں گے۔ اطلاعات کے مطابق روسی وزارت دفاع نے ایک بیان میں کہا  ہے کہ ترکی اور شام کی سرحد میں تنازع کی جگہ پر نگرانی کے لیے 300 اہلکار پہنچ چکے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ملیٹری پولیس کے اہلکاروں کو روس کی چیچنیا کے خطے سے شام بھیجا گیا ہے جو عوام کی سلامتی کو یقینی بنائیں گے اور سرحد سے 30 کلومیٹر کے علاقے سے واپسی میں کرد فورسز کی مدد کریں گے۔روسی وزارت دفاع کے مطابق اس عمل کو مکمل کرنے کے لیے ملیٹری پولیس کے ساتھ ساتھ 20 سے زائد فوجی گاڑیاں بھی شام بھیجی جاچکی ہیں۔ خیال رہے کہ روس اور ترکی نے رواں ہفتے ایک معاہدے پر دستخط کیا تھا جس کے مطابق روسی ملیٹری پولیس اور شامی سرحدی گارڈز، کردش پیپلز پروٹیکشن یونٹس (وائی پی جی) کو سرحد میں 30 کلومیٹر کا علاقہ خالی کرنے میں معاونت کریں گے۔ ترک صدر رجب طیب اردوغان اور روسی صدر ولادیمیر پیوٹن کے درمیان ساحلی شہر سوچی میں طویل مذاکرات کے بعد یہ معاہدہ طے پایا تھا۔رپورٹ کے مطابق شام پہنچنے والے روسی اہلکار اگلے ہفتے سے باقاعدہ نگرانی کا آغاز کریں گے۔

News Code 1894870

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 3 =