یورپی یونین کا پاکستان اور بھارت پر مذاکرات  کے لئے زور

یورپی یونین نے مسئلہ کشمیر کے حل کے سلسلے میں پاکستان اور بھارت کے مابین فوری مذاکرات پر زور دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ یورپی یونین نے مسئلہ کشمیر کے حل کے سلسلے میں پاکستان اور بھارت کے مابین فوری مذاکرات پر زور دیا ہے۔ چیئرمین کشمیر کونسل ای یو، علی رضا سید کو لکھے گئے ایک خط میں یورپی یونین کی وزارتِ خارجہ  کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے کہا ہے کہ یورپی یونین خطے کی صورتِ حال کا قریب سے جائزہ لے رہی ہے۔

یہ خط ایکسٹرنل ایکشن سروس کے پاکستان اور افغانستان کے متعلق شعبے کے سربراہ دیتمار کرسلر نے یورپی کمیشن کے صدر کی طرف چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید کے خطوط کے جواب میں لکھا ہے جو انہوں نے  کشمیر کی گمبھیر صورتِ حال پر حالیہ ہفتوں کے دوران ای یو حکام کو لکھے تھے۔

یورپی وزارت خارجہ کے اعلیٰ عہدیدار نے جواب میں کہا ہے کہ یورپی یونین چاہتی ہے کہ بھارت اور پاکستان دونوں ممالک کشمیریوں کی ہر ممکن شمولیت کے ساتھ تنازع کا حل تلاش کریں۔

انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بارے میں انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کی انسانی حقوق کی  بین الاقوامی ذمے داریوں کو مدِنظر رکھتے ہوئے انسانی حقوق کی پامالی کی مکمل، فوری اور شفاف تحقیقات ہونی چاہیے۔

ای یو کے خط میں مزید کہا گیا ہے کہ یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ  فیڈریکا موگرینی نے اپنے بیانات اور پاکستان اور بھارت کے ساتھ براہِ راست رابطوں کے دوران کشیدگی کم کرنے پر زور دیا اور یہ بہت اہم ہے کہ پاکستان اور بھارت سفارتی اور سیاسی سطح پر آپس میں بات چیت بحال کریں۔

ای یو کی اعلیٰ سفارتی نمائندے نے دونوں ملکوں کے وزرائے خارجہ سے بات چیت کے دوران بھی مقامی آبادی کے مفاد کو اہمیت دینے پر زور دیا ہے۔

واضح رہے کہ کشمیر کونسل ای یو کے چیئرمین علی رضا سید اپنے خطوط میں یورپی کمیشن کے صدر سمیت اعلیٰ یورپی حکام کو مقبوضہ کشمیر کی گمبھیر صورتِ حال کے بارے میں اپنے خطوط کے ذریعے وہاں فوری طور پر کرفیو ختم کروانے اور مظالم روکوانے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔

News Code 1894034

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 6 =