امریکہ کے لئے عربوں کےتیل کی بڑی اہمیت اورعربوں کے خون کی کوئی قدر و قیمت نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے امریکہ کے نزدیک خون کے مقابلے میں تیل کی اہمیت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کے نزدیک سعودی عرب کے تیل کی بہت بڑی اہمیت ہے لیکن یمنی عوام کے خون کی کوئی قدر و قیمت نہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے اپنے ایک ٹوئیٹر بیان میں  امریکہ کے نزدیک خون کے مقابلے میں تیل کی اہمیت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کے نزدیک سعودی تیل کی بہت بڑی اہمیت ہے لیکن یمنی عوام کے خون کی کوئی قدر و قیمت نہیں ۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ کے نزدیک عربوں کے خون سے عربوں کی تیل کی بہت بڑی اہمیت ہے اور امریکہ کی سیاسی الف با بھی یہی ہے۔ گذشتہ 4 برسوں کے دوران سعودی عرب کی وحشیانہ بمباری میں ایک لاکھ یمنی شہری شہید اور زخمی ہوگئے 20 ملین یمنی غذائی مشکلات کا شکار اور ڈھائی ملین یمنی وبائی امراض سے دوچار ہوگئے ہیں۔ ظریف نے کہا کہ سعودی عرب کے تیل کے کنوؤں پر یمنی فورسز کا دفاعی حملہ کسی بھی صورت میں جنگی اقدام نہیں بلکہ یہ دفاعی اقدام ہے۔

News Code 1893911

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 13 =