ہمیں تشدد کا نشانہ نہ بنایا جائے بلکہ گولی ماردی جائے

بی بی سی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق بھارتی جیلوں میں قید کشمیروں کو بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے جیلوں میں قید کشمیری یہ کہہ رہے ہیں کہ انھیں تشدد کا نشانہ نہ بنایا جائے بلکہ گولی مار کر قتل کردیا جائے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بی بی سی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ  بی بی سی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق بھارتی جیلوں میں قید کشمیروں کو بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے جیلوں میں قید کشمیری یہ کہہ رہے ہیں کہ انھیں تشدد کا نشانہ نہ بنایا جائے بلکہ گولی مار کر قتل کردیا جائے۔ کشمیر میں بھارتی فوج کے ظلم وستم کی داستا نیں سامنے آ گئیں، بھارتی فوج غیر قانونی قید کے دوران کشمیریوں کو تشدد کا نشانہ بنا رہی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق بی بی سی کے رپورٹر نے کشمیر کے جنوبی اضلاع کے علاقوں کادورہ کیا جہاں کشمیریوں نے بھارتی فوج کی جانب سے ڈھائے گئے مظالم کی داستانیں سنائیں۔  بی بی سی رپورٹر کے مطابق کشمیریوں نے بھارت کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم، رات گئے چھاپوں، مارپیٹ، اور تشدد کی ملتی جلتی کہانیاں سنائیں۔

بی بی سی میں شائع رپورٹ کے مطابق ڈاکٹرز صحافیوں سے کسی بھی مریض کے بارے میں بات نہیں کرنا چاہتے،کشمیریوں نے بھارتی سیکیورٹی فورسز پر مارپیٹ اور تشدد کے الزامات لگائے۔

کشمیریوں نے بی بی سی رپورٹر سے بات کرتے ہوئےبتایا کہ ہم پر تشدد نہ کریں، بس گولی مار دیں،انہوں نے بتایا کہ انہیں لاٹھیوں،بھاری تاروں سے مارا جاتا ہے اور بجلی کے جھٹکے دیے جاتے ہیں ۔

کشمیری شہری نے بھارتی فورسز کی جانب سے کئے جانے والے ظلم کی داستان سناتے ہوئے آرٹیکل 370ختم کرنے کے متنازع فیصلے کے چند گھنٹوں بعد ہی فوج گھر گھر گئی ،بھارتی فوج نے راتوں میں چھاپے مار کر گھروں سے اٹھایا، ایک جگہ پر سب کو جمع کیا،بھارتی فوج نے ہمیں مارا پیٹا،ہم پوچھتے رہے ہم نے کیا کیا ہے۔

بھارتی فورسز کچھ بھی سننا نہیں چاہتے تھے اور انھوں نے کچھ بھی نہیں کہا، وہ بس ہمیں مارتے رہے،بھارتی فوج نے ہمیں لاتیں ماریں، ڈنڈوں سے مارا، بجلی کے جھٹکے دیے، تاروں سے پیٹا،جب بےہوش ہو گئے تو انہوںنے ہمیں ہوش میں لانے کے لیے بجلی کے جھٹکے دیے،انہوں نے ہمیں ڈنڈوں سے مارا اور ہم چیخے تو انہوں نے ہمارے منہ مٹی سے بھر دیئے۔

مظلوم کشمیری نے بی بی سی رپورٹر کو بتایا کہ میں خدا سے موت کی دعا کر رہا تھا کیونکہ یہ تشدد ناقابلِ برداشت تھا،بھارتی فورسزنے وارننگ دی کہ کوئی بھی بھارت مخالف مظاہروں میں شرکت نہ کرے،مظالم جاری رہے تو گھر چھوڑ دینے کےسوا کوئی چارہ نہیں رہے گا، وہ ہمیں ایسےمارتےہیں جیسے جانوروں کو مارا جاتا ہے،وہ ہمیں انسان ہی نہیں سمجھتے۔

بی بی سی رپورٹر نے اپنی رپورٹ میں ثبوت کے طور پر بھارتی فورسز کی جانب سے کیے جانے والے مظالم کی تصاویر بھی شیئر کی ہیں۔

News Code 1893346

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 6 =