ایران نے یورینیم افزودگی کی مقدارکو 67۔3 فیصد سے 5۔4 فیصد تک پہنچا دیا

اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری ادارے کے ترجمان کمالوندی نے کہا ہے کہ ایران نے یورینیم افزودگی کی مقدارکو 67۔3 فیصد سے 5۔4 فیصد تک پہنچا دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری ادارے کے ترجمان کمالوندی نے کہا ہے کہ ایران نے یورینیم افزودگی کی مقدارکو 67۔3 فیصد سے 5۔4 فیصد تک پہنچا دیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ایران نے یہ اقدام واشنگٹن کی جانب سے گروپ 1+5 اور ایران  سے طے کیے گئے مشترکہ جوہری معاہدے سے دستبرداری کو ایک سال سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد اٹھایا ہے۔

ایرانی جوہری توانائی کے ادارے کے ترجمان بہروز کمال وندی نے یورینیم افزودہ کرنےکی طے شدہ حد 67۔3 فیصد حد کو بڑھا کر 4.5 فیصد کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ایران کا کہنا ہے کہ معاہدے میں شریک ملکوں نے اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا جس کی بنا پر ایرانی قوم کو شدید نقصان کا سامنا ہے۔ کمالوندی نے کہا کہ ہمارے فیصلے ملکی ضروریات کے پیش نظر ہوتے ہیں۔

News Code 1892002

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 13 =