رانا ثناء اللہ کے خلاف منشیات کیس میں پولیس افسر گرفتار

پاکستان میں انسداد منشیات فورس نےمسلم لیگ نون کے مرکزی رہنما اور پارلیمنٹ کے ممبر رانا ثناء اللہ کے خلاف منشیات کیس میں پولیس افسران کی گرفتاریوں کا سلسلہ شروع کرتے ہوئے فیصل آباد کے ڈی ایس پی ملک خالدکو گرفتار کرلیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں انسداد منشیات فورس نےمسلم لیگ نون کے مرکزی رہنما اور پارلیمنٹ کے ممبر رانا ثناء اللہ کے خلاف منشیات کیس میں پولیس افسران کی گرفتاریوں کا سلسلہ شروع کرتے ہوئے فیصل آباد کے ڈی ایس پی ملک خالدکو گرفتار کرلیا ہے۔ جبکہ سابق ایس ایس پی فیصل آباد رائے ضمیر کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اے این ایف نے فیصل آباد تعینات رہنے والے رانا ثنا کے قریبی پولیس افسران کا تمام ریکارڈبھی اکٹھا کرنا شروع کر دیا ہے جو انکے دور میں اہم عہدوں پر ڈیوٹی کرتے رہے۔ اسکے علاوہ رانا ثناء اللہ کے اثاثوں اور گاڑیوں کا ریکارڈ بھی طلب کیا گیا ہے۔اس حوالے سے انسداد منشیات فورس نے تمام اداروں کو خطوط بھی ارسال کر دیئے ہیں تاکہ معلوم ہوسکے کہ رانا ثناء اللہ نے گھروں کے علاوہ زمین اور دیگر کاروبار منشیات کی رقوم سے تو نہیں بنائے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق ایس ایس پی فیصل آباد رائے ضمیر کی گرفتاری کیلئے چھاپوں کی کارروائی رانا ثناء اللہ کے دوران تفتیش اہم انکشافات پر عمل میں لائی گئی ہے۔، اگلی پیشی پر اے این ایف حکام تمام ریکارڈ بھی عدالت میں پیش کریں گے۔ جبکہ فورس کمانڈر پنجاب اے این ایف بریگیڈئیر خالد محمود گورایہ ڈی جی اے این ایف کو اب تک کی تفتیش کے حوالے سے آگاہ کریں گے۔ پنجاب پولیس کے ملوث افسران کی گرفتاری کے لیے اے این ایف نے آئی جی پنجاب کو تحریری طور پر بھی آگاہ کر دیا ہے۔

News Code 1891933

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 12 =