بورس جانسن کے گھر میں چیخ و پکار کے بعد پولیس پہنچ گئی

برطانیہ کی حکمراں جماعت کے سرِفہرست امیدوار بورس جانسن کے گھر میں چیخ و پکار اور ٹکرانے کی انتہائی بلند آوازیں آنے کے بعد پولیس پہنچ گئی ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ برطانیہ کی حکمراں جماعت کے سرِفہرست امیدوار بورس جانسن کے گھر میں چیخ و پکار اور ٹکرانے کی انتہائی بلند آوازیں آنے کے بعد پولیس پہنچ گئی ۔55   برس کے بورس جانسن ، اس گھر میں اپنی 31 برس کی دوست کیری سائمنڈز کے ساتھ رہائش پزیر ہیں۔

ایک ملین پاؤنڈ مالیت کے اس گھر سے شور شرابے کی آوازوں سے متعلق رپورٹ اہل محلہ نے دی، جن کا دعویٰ تھا کہ انہوں نے مس سائمنڈ کو بورس جانسن سے باآواز بلند یہ کہتے سنا تھا کہ مجھ سے دور ہو جاؤ اور میرے گھر سے نکل جاؤ جبکہ بورس جانسن اپنی دوست پر چیخ رہے تھے کہ میرا لیپ ٹاپ چھوڑ دو۔ تھوڑی دیر بعد گھر میں کسی چیز کے زور سے ٹوٹنے کی آواز آئی۔

بورس جانسن برطانیہ کی حکمراں جماعت ٹوری پارٹی کی سربراہی کے لیے انتخاب کی دوڑمیں سرِ فہرست ہیں ان کامقابلہ جریمی ہنٹ سے ہوگا، جو کامیاب ہو گا وہی برطانیہ کا اگلا وزیر اعظم ہو گا۔ پولیس جب گھر پہنچی تو بورس جانسن اور ان کی دوست کیری سائمنڈز نے پولیس کو مطمئن کر کے واپس بھیج دیا۔

News Code 1891564

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =