ترک صدر کا مصر پرمحمد مرسی کو قتل کرنے کا الزام/  قتل کی تحقیقات کا مطالبہ

ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کا کہنا ہے کہ مصر کے سابق صدر محمد مرسی کوآشکارا طور پر قتل کیا گیا، وہ عدالت میں 20 منٹ تک زندگی وموت کی کشمکش میں مبتلا رہے انھیں طبی امداد تک فراہم نہیں کی گئي۔

مہر خبررساں ایجنسی نے دنیا نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کا کہنا ہے کہ مصر کے سابق صدر محمد مرسی کوآشکارا طور پر قتل کیا گیا، وہ عدالت میں 20 منٹ تک زندگی وموت کی کشمکش میں مبتلا رہے انھیں طبی امداد تک فراہم نہیں کی گئي۔

صدر اردوغان نے کہا کہ ہم اس چیز کا تعاقب جاری رکھیں گے اور عالمی عدالت میں مصری حکومت کے خلاف کارروائی کے لیے لازمی اقدامات اٹھائیں گے،ہم اسلامی تعاون تنظیم سے اس چیز کا مطالبہ کرتے ہیں۔ اس تنظیم کو اس حوالے سے لازمی قدم اٹھانا ہو گا۔اردوغان کاکہنا تھا کہ صدر مرسی عدالت میں 20 منٹ تک زندگی وموت کی کشمکش میں رہے، مصری حکام نے مرسی کی جان بچانے کے لیے کچھ نہیں کیا۔ وہاں پر موجود حکام اس صورتحال کے سامنے ہاتھ پر ہاتھ رکھے بیٹھے رہے۔ان کا کہنا کہ رواں ماہ کے آخر میں جاپان میں ہونیوالی جی 20 کانفرنس کے دوران بھی مرحوم محمد مرسی کے معاملے کو اٹھایا جائے گا۔ اس معاملے کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے جو ہو سکا کریں گے۔صدر رجب طیب ایردوان کا کہنا ہے کہ وہ مصر کے خلاف عالمی عدالتوں میں کاروائی کرانے کے لیے لازمی اقدامات اٹھائیں گے۔

News Code 1891524

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =