صدر اردوغان کی غزہ اور یمن پر اسرائیل اور سعودی عرب کے بھیانک جرائم کی مذمت

ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے ترکی کے شہر استنبول میں افطار پارٹی میں یمن پر سعودی عرب اور غزہ پر اسرائیلی بربریت اور جارحیت کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن پر سعودی عرب کی مسلط کردہ کثیف اور بھیانک جنگ کے نتیجے میں ہزاروں بے گناہ یمنی بچوں کو موت،بھوک، پیاس اور قحط کا سامنا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العالم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے ترکی کے شہر استنبول میں افطار پارٹی میں یمن پر سعودی عرب اور غزہ پر اسرائیلی بربریت اور جارحیت کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن پر سعودی عرب کی مسلط کردہ کثیف اور بھیانک جنگ کے نتیجے میں ہزاروں بے گناہ یمنی بچوں کو موت،بھوک، پیاس اور قحط کا سامنا ہے۔ اردوغان نے غزہ پر اسرائیلی بربریت کی طرف بھی اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں پر اسرائیلی جرائم کا سلسلہ عالمی برادری کے سکوت کے سائے میں جاری ہے۔ اردوغان نے کہا کہ لیبیا سے لیکر افغانستان، روہنگیا، صومالیہ ، فلسطین اور عراق ہر جگہ دنیائے اسلام میں جنگ و جدال کا سلسلہ جاری ہے۔ اردوغان نے ترکی میں سعودی عرب کے 11 سکیورٹی اہلکاروں کے ہاتھوں  سعودی صحافی جمال خاشقجی کے بھیانک قتل کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ بعد میں تحقیقات سے پتہ چلا کہ خاشقجی کے قتل میں ملوث سعودی اہلکاروں کی تعداد 25 تھی  اور انھیں سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کی سرپرستی حاصل تھی۔ اردوغان نے کہا کہ سعودی عرب نے خاشقجی کو بھیانک طریقہ سے قتل کرکے خوفناک جرم کا ارتکاب کیا ہے۔

News Code 1890455

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 3 =