افغان صدر نے خفیہ ادارے کے دو سابق سربراہان کو وزیر داخلہ اور وزیر دفاع مقرر کردیا

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے افغان خفیہ ادارے کے دو سابق سربراہان کو وزیرداخلہ اور وزیر دفاع مقرر کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل یا ہے کہ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے افغان خفیہ ادارے کے دو سابق سربراہان کو وزیرداخلہ اور وزیر دفاع مقرر کردیا ہے۔صدر اشرف غنی کی جانب سے جاری حکم نامے کے مطابق امراللہ صالح اور اسداللہ خالد کو بالترتیب وزیر داخلہ اور وزیردفاع مقرر کیا گیا ہے۔ افغان صدر کی جانب سے وزیر نامزد کیے جانے والے امراللہ صالح نے 1990 کی دہائی میں طالبان کے خلاف لڑائی میں حصہ لیا اور 2004 سے 2010 کے دوران نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) کے سربراہ کے طور پر کام کیا۔اسداللہ خالد کو 2012 میں مختصر مدت کے لیے این ڈی ایس کا سربراہ مقرر کیا گیا تھا جبکہ طالبان کے خود کش حملے میں زخمی بھی ہوئے تھے۔صدارتی حکم نامے کے مطابق دونوں شخصیات پارلیمنٹ سے منظوری تک عبوری وزرا کے طور پر کام کریں گے۔ نامزد دونوں وزرا سابق انٹیلی جنس سربراہ ہیں اور انہوں نے ماضی میں پاکستان پر افغان طالبان کے ذریعے ملک میں کشیدگی پھیلانے کے الزامات عائد کیے تھے۔

News Code 1886715

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 7 =