اتنے صحافی جان سے نہیں جاتے جتنے مارے جاتے ہیں

ایک رپورٹ کے مطابق دنیا میں جنگ سے متاثرہ علاقوں میں رپورٹنگ کے دوران اتنے صحافی جان سے نہیں جاتے جتنے قتل کردیئے جاتے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ایک رپورٹ کے مطابق دنیا میں جنگ سے متاثرہ علاقوں میں رپورٹنگ کے دوران اتنے صحافی جان سے نہیں جاتے جتنے قتل کردیئے جاتے ہیں۔ اس بات کا انکشاف امریکہ کے معروف جریدے کی رپورٹ میں کیا گیا ہے، جس کے مطابق دنیا بھر میں صحافت کے لئے ماحول بدتر ہوا ہے اور پیغام پہنچانے والے کو ماردینا معمول بنتا جارہاہے۔

صحافیوں کے تحفظ کے لئے سرگرم تنظیم کمیٹی ٹو پروٹیکٹ جرنلسٹس کے مطابق امریکہ جیسے ترقی یافتہ ملک میں بھی خود امریکی قیادت کی جانب سے پریس مخالف جذبات کو ابھارا گیا۔ رپورٹ کے مطابق متعدد عالمی رہنما اپنے خلاف تنقید کو کچلنے کے لئے ڈونلڈ ٹرمپ کے صحافت مخالف فیک نیوز پروپیگنڈے کا بھرپور فائدہ اٹھارہے ہیں۔

رپورٹ میں سعودی صحافی جمال خاشقجی کی پراسرار گمشدگی اور یورپی یونین فنڈز میں مبینہ کرپشن بے نقاب کرنے پر بلغاریہ کی خاتون صحافی وکٹوریا میرانووا کے قتل پر شدید تشویش کا اظہار کیا گیا۔

News Code 1884802

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 8 =