فارق عبداللہ کے گھر کے محافظوں نے ایک بےگناہ سید زادے کو گولیوں سےبھون دیا

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے سابق وزیر اعلی فارق عبداللہ کے جموں ميں واقع گھر کے محافظوں نے ایک نہتے اور بےگناہ سید زادے سید مراد علی شاہ کو گولیوں سے بھون دیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے کشمیر ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے سابق وزیر اعلی فارق عبداللہ کے جموں ميں واقع گھر کے محافظوں نے ایک نہتے اور بےگناہ سید زادے سید مراد علی شاہ  کو گولیوں سے بھون دیا۔ عینی شاہدین کے مطابق مرحوم سید مراد علی اپنی گاڑی ٹرن کررہے تھے کہ ان کی گاڑی فارق عبداللہ کے گھر کے دروازے  سے لگ گئی جس کے بعد محافظوں نے سید مراد علی شاہ کو گالیاں دینا شروع کردیا اور اس پر 5 گولیاں فائر کرکے اسکی زندگی کا خاتمہ کردیا ۔ ذرائع کے مطابق سید مراد اپنے والدین کا اکلوتا بیٹا تھا جس فاروق عبداللہ کے محافظوں بے دردی اور بے رحمی کے ساتھ قتل کردیا۔ کشمیر ذرائع کے مطابق مرحوم سید مراد علی شاہ تحصیل مینڈھر کے گلوتہ گاؤں کا رہنے والے تھے اور وہ جموں میں طالب علم تھے۔

News Code 1882819

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =