افغانستان میں پہلی خآتون جنرل کے عہدے تک پہنچنے میں کامیاب

افغانستان میں پہلی بار ایک فوجی خاتون " جنرل " کے عہدے تک پہنچنے میں کامیاب ہو گئی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں پہلی بار ایک فوجی خاتون " جنرل " کے عہدے تک پہنچنے میں کامیاب ہو گئی ہیں۔ خاتون محمد زئی ہیں جو گزشتہ 30 سال سے افغان فوج میں خدمات انجام دے رہی ہیں اور اب اپنی صلاحیتوں کے باعث افغان فوج میں ’جنرل‘ کے عہدہ حاصل کرنے والی پہلی خاتون بن گئی ہیں۔ افغان فوج کی پہلی خاتون جنرل اور چھا تہ بردار خاتول محمدزئی اس سے قبل ایک کمانڈو اور چھا تہ بردار کی حیثیت سے  پیراشوٹ کے ذریعے 600 سے زائد بار بلند فضاؤں سے زمین پر اترنے کا کامیاب مظاہرہ کر چکی ہیں۔ ان کی خدمات کے عوض انہیں بڑی تعداد میں مختلف قومی و مقامی ایوارڈز، اسناد، اور تمغے بھی مل چکے ہیں۔

جنرل خاتول محمد زئی نے جنرل کا عہدہ حاصل کرنے پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے بین الاقوامی میڈیا کو بتایا کہ افغان فوج میں بھرتی کے وقت بہت مشکل کا سامنا تھا تاہم اب حالات بدل چکے ہیں اور آج جب میں فوجی وردی میں شہر میں نکلتی ہوں تو لوگ شفقت، ستائش اور محبت کی نظروں سے دیکھتے اور ہمت افزائی کرتے ہیں۔

News Code 1879588

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 7 =