ترکی کو شام کی ارضی سالمیت کا احترام کرنا چاہیے/ فوجی مداخلت سے مسائل پیچيدہ ہوتے ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے دوسرے ممالک میں کسی بھی قسم کے فوجی اقدامات کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو شام کی ارضی سالمیت کا احترام اور اپنے خدشات کو شام کے ساتھ مذاکرات کے ذریعہ حل کرنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے دوسرے ممالک میں کسی بھی قسم کے فوجی اقدامات کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو شام کی ارضی سالمیت کا احترام اور اپنے خدشات کو شام کے ساتھ مذاکرات کے ذریعہ حل کرنا چاہیے۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے شام کی سرحد پر ترکی کی فوجی نقل و حرکت اور فوجی حملے کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایران دیگر ممالک میں فوجی کارروائی کے خلاف ہے ۔ دوسرے ممالک میں فوجی کارروائی سے حالات مزيد پیچیدہ ہوجاتے ہیں۔ ایران کو ترکی کے خدشات کا علم ہے ۔ ترکی کو اپنے خدشات دور کرنے کے لئے فوجی مداخلت کے بجائے شامی حکومت کے ساتھ مذاکرات اور گفتگو کا راستہ اختیار کرنا چاہیے۔

خطیب زادہ نے کہا کہ حالیہ برسوں کے تجربات سے ظاہر ہوتا ہے کہ دوسرے ممالک میں فوجی مداخلت سے مسائل حل نہیں ہوتے بلکہ مزيد پيچیدہ ہوجاتے ہیں۔ خطیب زادہ نے کہا کہ ایران اپنے ہمسایہ ماملک کے درمیان مسائل کو حل کرنے کے سلسلے میں ہر ممکن مدد فراہم کرنے کے لئے آمادہ ہے۔

News Code 1911016

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 1 =