نائجیریا میں پولیس نے امام مہدی (عج) امامبارگاہ کو محاصرے میں لے لیا

ذرائع کے مطابق نائجیریا کی ریاست سوکوٹو میں پولیس نے امام مہدی (عج) امامبارگاہ کو اپنے محاصرے میں لے لیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق نائجیریا کی ریاست سوکوٹو میں پولیس نے امام مہدی (عج) امامبارگاہ کو اپنے محاصرے میں لے لیا ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق نائجیریا کی ریاست سوکوٹو میں پولیس کے بارہ ٹرکوں نے  امام مہدی امام بارگاہ کا محاصرہ کررکھا ہے ۔ اطلاعات کے مطابق ایک ایسے گورنر کو اس ریاست میں تعینات کیا گيا ہے جو سعودی عرب کا طرفدار اور شیعہ مسلمانوں کا قتل عام کرنے میں مشہور ہے۔

نائجیریا کی حکومت نے اس سے قبل 2015 میں صاحب الزمان امام بارگاہ پر حملہ کرکے 2 ہزار سے زائد حسینی عزاداروں کو شہید اور زخمی  کردیا تھا ۔ اس کے بعد نائجیریا کی فوج نے زاریا میں  بقیۃ اللہ امام بارگاہ پر حملہ کرکے شیخ ابراہیم زاکزاکی اور ان کی ہمسر  کو زخمی کرکے گرفتار کرلیا اس حملے میں شیخ زکزاکی کی ایک آنکھ مکمل طور پر ختم ہوگئی جبکہ دوسری آنکھ کی بینائی بھی ختم ہورہی ہے ۔ اس وحشیانہ حملے میں سیکڑوں عزادار شہید اور زخمی ہوگئے شہداء میں شیخ زکزاکی کے بیٹے بھی شامل ہیں۔

News Code 1902541

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =