ریاست منی پور کے علیحدگی پسند رہنماؤں نے لندن میں جلاوطن حکومت قائم کرلی

بھارت کی علیحدگی پسند ریاست منی پور کے رہنمائوں نے بھارت سے آزادی کا اعلان کردیا ہے جبکہ انہوں نے لندن میں اپنی جلاوطن حکومت بھی قائم کردی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت کی علیحدگی پسند ریاست منی پور کے رہنمائوں نے بھارت سے آزادی کا اعلان کردیا ہے جبکہ انہوں نے لندن میں اپنی جلاوطن حکومت بھی قائم کردی ہے۔

اطلاعات کے مطابق بھارتی ریاست منی پور سے تعلق رکھنے والے علیحدگی پسند رہنما نے لندن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بھارت سے آزادی اور اپنی جلاوطن حکومت کے قیام کا اعلان کیا۔یاد رہے کہ منی پور کی ریاست نے تقسیم ہند نہیں بلکہ 1949 میں بھارت کے ساتھ الحاق کا اعلان کیا تھا، تاہم اس کے بعد سے علیحدگی پسندوں کی جانب سے آزادی کی تحریکیں جاری ہیں۔علیحدگی پسندوں کی جانب سے اس ریاست کا نام منی پور اسٹیٹ کونسل رکھا گیا ہے۔اپنی خود ساختہ حکومت کے وزیر خارجہ نرینبم سمرجیت لندن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ  یہ جلا وطن حکومت اقوام متحدہ میں خود کو تسلیم کروانے کے لیے سفارتی کوششیں کرے گی۔انہوں نے کہا کہ وہ آج سے ہی اس قانونی جلاوطن حکومت کو چلائیں گے۔ نرینبم سمرجیت کا کہنا تھا کہ اگر وہ آزادی کا اعلان بھارت میں رہتے ہوئے کرتے تو انہیں گرفتاری کا سامنا کرنا پڑتا اور خدشہ ہے کہ ماوورائے عدالت قتل کردیا جاتا۔اس حوالے سے جب لندن میں بھارتی ہائی کمشنر سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کوئی جواب نہیں دیا۔منی پور بھارت کی چھوٹی ریاستوں میں سے ایک ہے جس کی آبادی تقریباً 30 لاکھ ہے جو شمال مشرقی بھارت میں واقع ہے۔

News Code 1895023

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 1 =