امریکہ، اسرائیل اور ان کےاتحادی ممالک صرف طاقت کی زبان سمجھتے ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ کے خطیب نے امریکہ اور اسرائیل کی ریشہ دوانیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ، اسرائیل اور ان کے بعض علاقائی اتحادی ممالک صرف طاقت کی زبان سمجھتے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ حجۃ الاسلام ابوترابی فرد کی امامت میں منعقد ہوئی جس میں لاکھوں افراد نے شرکت کی۔ تہران میں خطیب جمعہ نے علاقائی اور عالمی سطح پر امریکہ اور اسرائیل کی ریشہ دوانیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ، اسرائیل اور ان کے بعض علاقائی اتحادی ممالک صرف طاقت کی زبان سمجھتے ہیں۔ خطیب جمعہ نے مرحوم آیت اللہ مہدوی کنی کو خراج عقیدت پیش کیا اور انھیں صادق، بصیر، شجاع اور رہبر معظم انقلاب اسلامی کا قوی اور مضبوط بازو قراردیتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالی مرحوم پر اپنی رحمت واسعہ نازل فرمائے۔

تہران کے عارضی امام جمعہ نے دنیا کے ساتھ ایران کے تعلقات کو مثبت ، منطقی اور مفید قراردیتے ہوئے کہا کہ ایران کے سبھی حکام دیگر ممالک کے ساتھ تعمیری مذاکرات کے حامی ہیں اور کوئی بھی دنیا کے ساتھ تقابل کا خواہاں نہیں ، ایران کا مقابلہ دنیا کے ساتھ نہیں بلکہ دنیا کے ساتھ ایران کے تعمیری تعلقات کا سلسلہ جاری ہے ہم صرف امریکہ اور اسرائیل کی توسیع پسندانہ پالسیوں کے خلاف ہیں ، اور امریکہ اور اسرائیل کی توسیع پسندانہ پالیسیوں کی مخالفت کو دنیا سے تقابل قراردنا غلط ہے۔ انھوں نے کہا کہ ایران واحد ملک نہیں جو امریکہ اور اسرائیل کی توسیع پسندانہ اور معاندانہ پالیسیوں کے خلاف ہے بلکہ چین، روس، ونزوئلا، کیوبا، شمالی کوریا سمیت کئی دیگر ممالک بھی امریکہ کی توسیع پسندانہ اور اقتصادی دہشت گردانہ پالیسیوں کے خلاف ہیں۔

خطیب جمعہ نے کہا کہ ایران سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبہ میں پیشرفت کی سمت گامزن ہے اور ایران کے علاقائی اور عالمی سطح پر دنیا کے ساتھ تعلقات اچھے اور مفید ہیں۔

News Code 1894856

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 8 =