ترک فوج کی طرف سیز فائر کی خلاف ورزی/ ایک ترک فوجی ہلاک

شام میں دریائے فرات کے شمالی علاقے تل ابیض میں ترک فوج اور کردملیشیا کے درمیان جھڑپ کے دوران ایک ترک فوجی ہلاک ہوگیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العہد کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ شام میں دریائے فرات کے شمالی علاقے تل ابیض میں ترک فوج اور کردملیشیا کے درمیان جھڑپ کے دوران ایک ترک فوجی ہلاک ہوگیا۔ اطلاعات کے مطابق امریکہ کی ثالثی میں ہونے والے امن معاہدے کے باوجود تل ابیض اور راس العین میں ترک فوج اور کرد ملیشیا کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ جس میں دونوں جانب سے جانی نقصان بھی ہوا اور ایک دوسرے پر معاہدے کی خلاف ورزی کا الزام بھی عائد کیا گیا۔

ترکی کی وزارت دفاع کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ تل ابیض میں پٹرولنگ پر مامور ترکی فوج پر حملہ کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں ترک فوج کا ایک سپاہی ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا۔ کرد ملیشیا کا کہنا ہے کہ ترکی کی جارح فوج نے امریکہ کے ساتھ کئۓ گئے معاہدے کو توڑ دیا ہے اور وہ مسلسل کرد ملیشیا کے خلاف کارروائی جاریر کھے ہوئے ہے۔ واضح رہے کہ رواں ماہ کی 17 تاریخ کو امریکی مداخلت پر ترکی اور امریکہ کے درمیان طے پانے والے معاہدے کے تحت 5 دنوں میں کردوں کو اپنا 444 کلومیٹر علاقہ خالی کرنا ہوگا اور اس دوران ترک فوج کوئی کارروائی نہیں کرے گی۔ لیکن ترک فوج کی کارروائی اور کردوں کی دفاعی کارروائی کا سلسلہ جاری ہے۔

News Code 1894730

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 5 =