نواز شریف سے جیل میں اراضی کیس میں تفتیش

پاکستان میں پاکپتن اراضی کیس میں اینٹی کرپشن ٹیم نے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے جیل میں سوا گھنٹہ تفتیش کی اور 15 سوالات پر مشتمل سوالنامہ ان کے سامنے رکھا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں پاکپتن اراضی کیس میں اینٹی کرپشن ٹیم نے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے جیل میں  سوا گھنٹہ تفتیش کی اور 15 سوالات پر مشتمل سوالنامہ ان کے سامنے رکھا۔ ذرائع کے مطابق اینٹی کرپشن ساہیوال کی چار رکنی ٹیم کوٹ لکھپت جیل لاہور پہنچی اور پاکپتن اراضی کیس میں نواز شریف سے تفتیش کی۔تحقیقاتی ٹیم نے 1985 کے کاغذات نواز شریف کے سامنے رکھے اور تفصیلات پوچھیں تو نواز شریف نے جواب دیا کہ34  سال پرانے کاغذات ہیں مجھے کچھ یاد نہیں۔تحقیقاتی ٹیم نے سوال کیا کہ کیا الاٹمنٹ کے لئے اخبار میں اشتہار دیا تھا، زمین کن بنیادوں پر دیوان قطب کو الاٹ کی گئی اور کن کن افسران کو الاٹمنٹ کا حکم نامہ جاری کیا گیا؟۔

نواز شریف نے پھر یہی جواب دیا کہ بہت پرانا کیس ہے مجھے کچھ یاد نہیں، میں نے تمام قانونی تقاضے پورے کئے تھے مگر تفصیلات یاد نہیں، اینٹی کرپشن ٹیم بیان قلمبند کرنے کے بعد جیل سے روانہ ہوگئی۔

News Code 1892567

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 4 =