سوڈان میں مظاہرین کے خلاف فوج کی کارروائی میں 100 سے زائد افراد ہلاک

سوڈان میں فوجی حکومت کے خلاف مظاہرین پر فوج کی فائرنگ کے نتیجے میں اب تک مجموعی طور پر 101 افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سوڈان میں فوجی حکومت کے خلاف مظاہرین پر فوج کی فائرنگ کے نتیجے میں اب تک مجموعی طور پر 101 افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے۔اس سے قبل سوڈانی دریائے نیل سے 40 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں اور مظاہرین نے فوج کی جانب سے غیرمشروط مذاکرات کی پیشکش بھی مسترد کردی ہے۔

واضح رہے کہ اپریل میں صدر عمر البشیر کو ہٹائے جانے کے بعد طاقتور عسکری کونسل اور حزبِ اختلاف کی جماعتوں میں اقتدار کی پرامن اور قابلِ قبول منتقلی پر ڈیڈلاک پیدا ہوگیا تھا۔ اس کے بعد حزبِ اختلاف کا احتجاج شروع ہوا جو شدید جھڑپوں کی شکل اختیار کرگیا ہے کیونکہ فوج نے جماعتوں سے کئے گئے تمام معاہدے ختم کردیئے تھے۔ اس طرح درجنوں ہلاکتیں رونما ہوئیں جس کا سلسلہ اب تک جاری ہے۔ عرب ذرائع کے مطابق سعودی عرب سوڈان میں بھی فوجی کودتا کی حمایت کررہا ہے اور اس طرح سعودی عرب نے یمن، لیبیا، شام ،عراق اور مصر کے عوام کے قتل عام کے بعد اب سوڈانی عوام کے خون میں بھی اپنے ہاتھ رنگین کر دیئے ہیں ۔

News Code 1891126

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 2 =