ایرانی سپاہ کو دہشت گرد قراردینا امریکہ کی کمزوری، خوف اور پریشانی کا مظہر

اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج کے اسٹریٹجک ریسرچ سینٹر کے سربراہ نے کہا ہے کہ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کو دہشت گردی کی فہرست میں شامل کرنا امریکہ کی کمزوری، بزدلی، خوف اور پریشانی کا مظہر ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج کے اسٹریٹجک ریسرچ سینٹر کے سربراہ جنرل پوردستان  نے کہا ہے کہ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کو دہشت گردی کی فہرست میں شامل کرنا امریکہ کی کمزوری، بزدلی، خوف اور پریشانی کا مظہر ہے۔ جنرل پوردستان نے کہا کہ امریکہ میں اب جنگ کرنے کی طاقت اور قدرت نہیں اس لئے وہ دوسرے طریقوں سے اپنی کمزوری اور ناتوانی کو چھپانے کی تلاش و کوشش کرتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی نے خطے میں اپنی طاقت اور قدرت کا لوہا منوا لیا ہے سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی اگر عراق اور شام کی حکومتوں کی بڑھ کر مدد نہ کرتی تو آج یہ دونوں ممالک امریکہ اور سعودی عرب کے پروردہ دہشت گردوں کے قبضہ میں ہوتے۔ انھوں نے کہا کہ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی نے ملکی اور غیر ملکی سطح پر دہشت گردی کے خاتمہ کے سلسلے میں اساسی اور کلیدی کردار ادا کیا ہے اور امریکہ نے ایسی فوج اور سپاہ کو دہشت گرد قراردیا ہے جس کا عراق اور شام میں دہشت گردی کے خلاف جنگ اور دہشت گردی کے خاتمہ میں بنیادی اور اساسی کردار رہا ہے۔

News Code 1889611

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 3 =