دجلہ میں کشتی ڈوبنے سے 100 افراد ہلاک

عراق کے شہر موصل کے نزدیک دریائے دجلہ میں گنجائش سے زائد مسافروں سے بھری کشتی ڈوبنے سے 100 افراد ہلاک اور متعدد لاپتہ ہوگئے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے عرب ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ عراق کے شہر موصل کے نزدیک دریائے دجلہ میں گنجائش سے زائد مسافروں سے بھری کشتی ڈوبنے سے 100 افراد ہلاک اور متعدد لاپتہ ہوگئے۔

مرنے والوں میں سے اکثریت خواتین اور بچوں کی ہے جو دریا کی تند و تیز موجوں کا سامنا نہ کر سکے۔ عراق کے محکمہ دفاع کے مطابق کشتی میں 200 افراد سوار تھے جن میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے جن میں اکثریت نہ تیرنے کے باعث اپنی جان نہ بچاسکے تاہم لاپتہ افراد کی تلاش کے لیے ریسکیو آپریشن جاری ہے جب کہ اب تک 55 افراد کو ریسکیو کرلیا گیا ہے جن میں 19 بچے بھی شامل ہیں۔ رپورٹس کے مطابق کشتی میں سوار افراد جشن بہاراں کے سلسلے میں ’نوروز‘ کا تہوار منانے کے لیے دریائے دجلہ کے کنارے ام رباعین جزیرے کا رخ کررہے تھے جہاں ہر سال بڑٰی تعداد میں سیاح جشن منانے آتے ہیں۔ عراق کے وزیر اعظم عدل عبدالمہدی نے واقعے کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے ملک میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے۔

News Code 1889056

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 11 =