شمالی کوریا امریکہ سے مذاکرات ختم کرنے پر غور کررہا ہے، شمالی کوریا کی نائب وزیر خارجہ

شمالی کوریا کی نائب وزیر خارجہ چوئے سون ہوئی کا کہنا ہے کہ ویتنام میں کم جونگ اُن اور ڈونلڈ ٹرمپ کی ملاقات بغیر کسی معاہدے کے ختم ہونے کے بعد جزیرہ نما کوریا، واشنگٹن سے جوہری مذاکرات معطل کرنے پر غور کر رہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے ایف پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ شمالی کوریا کی نائب وزیر خارجہ چوئے سون ہوئی کا کہنا ہے کہ ویتنام میں کم جونگ اُن اور ڈونلڈ ٹرمپ کی ملاقات بغیر کسی معاہدے کے ختم ہونے کے بعد جزیرہ نما کوریا، واشنگٹن سے جوہری مذاکرات معطل کرنے پر غور کر رہا ہے۔ شمالی کوریا کی نائب وزیر خارجہ چوئے سون ہوئی نے کہا کہ ہم امریکہ کے کسی مطالبے کو پورا کرنے کا ارادہ نہیں رکھتے، نہ ہی ہم اس قسم کے کسی مذاکرات کرنے کے خواہاں ہیں۔ چوئے سون ہوئی نے پیانگ یانگ میں صحافیوں اور غیرملکی سفارتکاروں کو بتایا کم جونگ ان جلد ہی اس حوالے سے کیے جانے والے اقدامات سے متعلق سرکاری بیان جاری کریں گے۔

چوئے سون ہوئی نے امریکہ کو ویتنام میں ہونے والے سربراہی اجلاس کی ناکامی کا ذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکی اسٹیٹ سیکریٹری مائیک پومپیو اور مشیر قومی سلامتی جون بولٹن نے بے اعتمادی کی فضا قائم کرتے ہوئے کم جونگ اُن اور ڈونلڈ ٹرمپ کی کوشش میں رکاوٹ پیدا کی۔ چوئے سون ہوئی نے کہا کہ جس کے نتیجے میں سربراہی اجلاس کسی اہم نتیجے پر پہنچے بغیر ہی ختم ہوگیا۔

News Code 1888878

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 2 =