ہیٹی میں حکومت کے خلاف مظاہروں میں 4 افراد ہلاک

ہیٹی میں صدر جووینل موائس کے خلاف پر تشدد مظاہروں میں 4 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے جب کہ مظاہرین نے صدر کے گھر پر بھی پتھراؤ کیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہیٹی میں صدر جووینل موائس کے خلاف پر تشدد مظاہروں میں 4 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے جب کہ مظاہرین نے صدر کے گھر پر بھی پتھراؤ کیا۔ ہیٹی میں اپوزیشن کی جانب سے صدر موائس کے خلاف مظاہروں میں شدت آگئی ہے، مظاہرین نے صدر کی رہائش گاہ پر پتھراؤ کیا، سڑکوں پر ٹائر جلا کر ٹریفک معطل کردی اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچایا۔ پولیس کی جانب سے مشتعل مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے لاٹھی چارج اور ہوائی فائرنگ کی گئی، کہیں کہیں پولیس اور مظاہرین میں جھڑپوں کی بھی اطلاع ہے۔ پُر تشدد واقعات میں 4 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ مظاہرین نے صدر کے مستعفی ہونے تک احتجاج روکنے سے انکار کردیا ہے۔

ہیٹی میں حکومت مخالف مظاہروں میں شدت اُس عدالتی فیصلے کے بعد آئی جس میں وزراء اور سرکاری حکام کا 2018 میں وینزویلا سے ملنے والی امداد میں خرد برد پر فرد جرم عائد کی گئی تھی۔ فنڈز کے استعمال میں بے ضابطگی میں صدر موائس بھی ملوث پائے گئے تھے۔

News Code 1888045

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 3 =