فرانس میں 200 سے زائد مظاہرین کی گرفتاری

فرانس میں یلو ویسٹ تحریک کے تحت ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں کے دوران ملک بھر سے 2 سو 44 افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فرانس میں یلو ویسٹ تحریک کے تحت ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں کے دوران ملک بھر سے 2 سو 44 افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔

فرانس کے وزیرداخلہ کرسٹوف کاسٹینر کا کہنا ہے کہ مظاہروں میں 2 سو 44 افراد کو حراست میں لیا گیا جن میں سے اب تک 2 سو ایک پولیس کی تحویل میں ہیں۔ درجنوں افراد کو وسطی شہر بوغج سے گرفتار کیا گیا جہاں ایک بڑی ریلی کا احتجاج متوقع تھا۔

وزارت داخلہ کے مطابق صدر امانوئیل میکرون کے خلاف کیے گئے نویں مظاہرے میں 84 ہزار سے زائد افراد نے شرکت کی اس سے قبل ہونے والے مظاہرے میں 50 ہزار افراد نے حصہ لیا تھا۔

پیرس میں آرک ڈی ٹرائیومپف میں مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئیں اور سیکیورٹی فورسز نے آنسو گیس اور واٹر کینن کے استعمال سے مظاہرین کو منتشر کرتے ہوئے انہیں چیمپ ایلیسز جانے سے روکا۔

فرانسیسی حکومت نے احتجاج کے نویں ہفتے صورت حال کو کنٹرول میں رکھنے کے لئے ملک کے مختلف علاقوں میں اسّی ہزار پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا۔

فرانس میں سترہ نومبر سے حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کے خلاف احتجاج کیا جا رہا ہے اور پولیس کے ساتھ جھڑپوں میں اب تک تقریباً دس افراد ہلاک اورسینکڑوں دیگر زخمی ہو چکے ہیں۔

فرانس میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف شروع ہونے والا احتجاج اب سرمایہ دارانہ نظام کے خلاف احتجاجی تحریک کی شکل اختیار کر چکا ہے جسے روکنے میں حکومت ناکام ہو گئی ہے۔

News Code 1887276

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 3 =