پاکستانی وزیر مملکت برائے داخلہ امور نے عدالت میں معافی مانگ لی

پاکستانی وزیر مملکت برائے داخلہ امور شہریار آفریدی نے جعلی بینک اکاؤنٹ کیس میں کابینہ ارکان کی بیان بازی نہ کرنےکی یقین دہانی کراتے ہوئے سابقہ بیانات پر عدالت سے معافی مانگ لی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزیر مملکت برائے داخلہ امور شہریار آفریدی نے جعلی بینک اکاؤنٹ کیس میں کابینہ ارکان کی بیان بازی نہ کرنےکی یقین دہانی کراتے ہوئے سابقہ بیانات پر عدالت سے معافی مانگ لی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ عدالت کویقین دلاتے ہیں کہ آئندہ کوئی وزیراس بارے میں بیان جاری نہیں کرے گا، وزیرمملکت نے عدالتی حکم سے پہلے کے بیانات پر سپریم کورٹ سے معذرت بھی کی۔ اس سے پہلے کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ مقدمے سے متعلق حکومت اوردوسری طرف کے لوگ تبصرے سے گریز کریں، اگر عدالت نے کسی کا بیان پکڑ لیا تو کارروائی ہوگی۔چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ یہ تاثر دے رہےہیں کہ یہ کارروائی ’کسی‘ کےکہنے پرکی جارہی ہے، یہ کارروائی ’کسی‘ کےکہنے پرنہیں کی جارہی،معاملات سامنے آئے اور عدالت اپنے ضمیر کے مطابق یہ کررہی ہے۔ اس موقع پر عدالت نے کیس کی سماعت آئندہ پیر تک ملتوی کر دی، اٹارنی جنرل کو آئندہ کابینہ اجلاس میں ای سی ایل لسٹ کا دوبارہ جائزہ لینے کاحکم بھی دے دیا۔

News Code 1886911

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 10 =