فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط تحریری معافی قبول

پاکستانی سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط تحریری معافی قبول کرتے ہوئے ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی ختم کر دی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی سپریم کورٹ نے توہین عدالت کیس میں سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کی غیر مشروط تحریری معافی قبول کرتے ہوئے ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی ختم کر دی۔ جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کی توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔دوران سماعت جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ تھوڑی سی احتیاط کرلیا کریں، اس عدالت نے ہمیشہ تحمل کا مظاہرہ کیا ہے، تنقید سے نہیں ڈرتے، جائز تنقید قابل برداشت ہوتی ہے۔جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ ہمارے پاس صرف ایک معاملے میں معافی کی درخواست آئی ہے، باقی معاملات ہماری عدالت کے سامنے نہیں ہیں۔وکیل فیصل رضا عابدی نے کہا کہ میرا موکل معافی مانگنا چاہتا ہے، وہ 70 دن سے جیل میں ہیں اور انہوں نے اب عدالت کی توقیر سے متعلق بہت کچھ سیکھ لیا ہے۔عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ معافی نامہ قبول ہونے سے ماتحت عدالتوں میں چلنے والی کارروائی پرکوئی اثر نہیں ہوگا، جس کے بعد سپریم کورٹ نے فیصل رضا عابدی کی غیرمشروط معافی قبول کرتے ہوئے معاملہ نمٹا دیا۔

News Code 1886583

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 7 =