پاکستانی وزير اعظم عمران خان اور امریکی وزير خارجہ پمپئو کی گفتگو متنازعہ بن گئی

پاکستانی وزارت خارجہ نے وزير اعظم عمران خان اور امریکی وزير خارجہ پمپئو کے درمیان ہونے والی گفتگو کے بارے میں امریکی وزارت خارجہ کے بیان کو حقائق کے منافی قراردیا ہے جبکہ امریکہ اپنے بیان پر ڈٹ گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزارت خارجہ نے وزير اعظم عمران خان اور امریکی وزير خارجہ پمپئو کے درمیان ہونے والی گفتگو کے بارے میں امریکی وزارت خارجہ کے بیان کو حقائق کے منافی قراردیا ہے جبکہ امریکہ اپنے بیان پر ڈٹ گیا ہے۔ امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیدر نورٹ نے کہا ہے کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو اور پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے درمیان ہونے والی ٹیلی فونک گفتگو کے حوالے سے جاری بیان پر قائم ہیں۔

واشنگٹن ڈی سی میں پریس بریفنگ کے دوران امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیدر نورٹ نے کہا کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلی فون کیا تھا، جس میں انہوں نے پاکستان کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کے فروغ کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان امریکہ کا ایک اہم شراکت دار ملک ہے، ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان کی نئی سول حکومت کے ساتھ امریکہ کے موثر اور کارآمد تعلقات قائم ہوں گے جب کہ ہم مائیک پمپئو اور پاکستانی وزیراعظم کی بات چیت سے متعلق اپنے موقف پر قائم ہیں۔ امریکی وزارت خارجہ کی ترجمان  کے مطابق امریکی وزير خارجہ مائيک پمپئو نے پاکستان کے وزير اعظم عمران خان پر واضح کیا ہے کہ پاکستان کو اپنی سرزمین پر موجود دہشت گرد گروہوں کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کرنا ہوگی۔ پاکستان کا کہنا ہے کہ اس قسم کی کوئي بات نہیں ہوئی جبکہ امریکہ اپنی بات پر ڈٹ گیا ہے۔

News Code 1883334

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =