یہودیوں کو مسجد الاقصی میں عبادت کی اجازت

غاصب صہیونی عدالت نے یہودیوں کو مسجد الاقصی میں عبادت کی اجازت دیتے ہوئے کہا ہے کہ مسجدالاقصی پر یہودیوں کا حق عربوں سے کم نہیں ہے۔

مہر خبـررساں ایجنسی نے ہاآرٹض کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ غاصب صہیونی عدالت نے یہودیوں کو مسجد الاقصی میں عبادت کی اجازت دیتے ہوئے کہا ہے کہ مسجدالاقصی پر یہودیوں کا حق عربوں سے کم نہیں ہے۔ اطلاعات کے مطابق اسرائیلی عدالت کی طرف سے یہ فیصلہ اس وقت کیا گیا جب اسرائیلی پولیس نے3 یہودی خواتین کو مسجد الاقصی کے باب حط میں عبادت سے روک دیا اور انہیں ممنوعہ مقام پر عبادت کرنے پر مسجد اقصی میں داخل ہونے پر چند روز کی پابندی عائد کردی۔ پولیس کے وکیل کا کہنا تھا کہ خواتین کو اس لیے وہاں سے ہٹایا گیا کیونکہ ان کی عباد ت کی وجہ سے مسلمانوں اور یہودیوں کے درمیان کشیدگی پیدا ہونے کا اندیشہ تھا،اس پر عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ اسرائیل میں بسنے والے شخص کو ہرجگہ حتی کہ ہر سڑک پر عبادت کا حق ہے اورکسی ایک گروپ کی وجہ سے دوسرے کو اس کے حق سے محروم نہیں کیاجاسکتا۔

News Code 1879633

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 1 =