افغانستان میں جھڑپوں کے نتیجے میں 30  وہابی دہشت گرد ہلاک

افغانستان میں جھڑپوں کے نتیجے میں 30 وہابی دہشت گرد اور 8 سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ امریکہ نے مزید 300 فوجی بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں جھڑپوں کے نتیجے میں 30  وہابی دہشت گرد اور 8  سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ امریکہ نے مزید 300 فوجی بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔  اطلاعات کے مطابق امریکی ڈرون نے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر نازیان میں طالبان کے ٹھکانے پر 2 میزائلوں سے حملہ کیا جس میں22  وہابی دہشت گرد مارے گئے اور متعدد زخمی بھی ہوئے۔ دہشت گردوں کی تلاش کیلیے علاقے میں سرچ آپریشن جاری ہے۔ حملے میں طالبان کمانڈر ذبیح اللہ آلیاس شینو اور داز گل کے مارے جانے کی اطلاع ہے۔ ننگرہار کے شہر جلال آباد کو گزشتہ 2برس سے طالبان نے اپنی سرگرمیوں کا مرکز بنا رکھا ہے۔ ادھرطالبان کے حملے میں 8 پولیس اہلکار ہلاک اور 16زخمی ہوگئے ہیں۔ صوبہ فراہ میں طالبان نے پولیس چوکی پر حملہ کیا۔ جھڑپ میں 8 طالبان بھی مارے گئے۔ امریکہ نے رواں برس بہار میں 300 فوجی افغانستان بھیجنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ فوجی افغان فورسز کو تربیت دینے والے نیٹو فورسزکی مدد کریں گے۔

News Code 1871373

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha