سعودی عرب میں پارلیمانی انتخابات کروانے کا مطالبہ

مہر نیوز/4 اپریل /2013ء: سعودی شہزادے الولید بن طلال نے سعودی عرب میں پارلیمانی انتخابات کروانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب میں عورتوں کو گاڑی چلانے کی اجازت بھی ملنی چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزيرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی شہزادے الولید بن طلال نے سعودی عرب میں پارلیمانی انتخابات کروانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب میں عورتوں کو گاڑی چلانے کی اجازت بھی ملنی چاہیے۔شہزادہ الولید نے کہ سعودی فرماں رواں شاہ عبداللہ کا شوریٰ کونسل میں خواتین ممبران کی شمولیت اچھا فیصلہ تھا۔ انھوں نے کہا کہ سعودی مملکت میں پارلیمانی انتخابات ہونے چاہییں۔ شہزادہ الولید بن طلال کے مطابق سعودی عرب میں جلد خواتین کو گاڑیاں چلانے  کی اجازت ملنی چاہیے انھوں نے عرب ریاستوں کی حکومتوں پر بھی شدید تنقید کی اور انھیں وہاں کے عوام کی انصاف اور آزادی کی خواہشات کے منافی قرار دیا۔ واضح رہے کہ  امریکہ سعودی عرب سمیت خلیجی ریاستوں میں اپنے پٹھوؤں کی حکومتوں کے جاری رکھنے کا خواہاں ہے اور وہ سعودی عرب سمیت دیگر خلیجی ریاستوں میں جمہوری نظام کے حق میں نہیں ہے۔ چونکہ جمہوری نظآم میں عرب ریاستوں میں امریکی مخالف حکومت قائم ہوسکتی ہے اور اسی وجہ سے امریکہ عرب ریاستوں میں جمہوریت کے حق میں نہیں ہے اور عرب ڈکٹیٹروں کی حمایت کررہا ہے عرب ریاستوں میں کہیں آل سعود، کہیں آل خلیفہ، کہیں آل ثانی، کہیں آل صباح اور کہیں آل نہیان حکومت کررہے ہیں اور مذکورہ تمام خاندان امریکی اور اسرائیلی مزدور ہیں جو عرب عوام کو اپنی بربریت اور جبر کا نشانہ بنائے ہوئے ہیں انہی خاندانوں کی وجہ سے آج تک مسئلہ فلسطین حل نہیں ہوسکا اگر یہ خاندان عرب ریاستوں پر حاکم نہ ہوتے تو مسئلہ فلسطین آج تک حل ہوجاتا ہے اور آج فلسطینی اپنے شہروں اور گھروں میں آباد ہوتے۔

News Code 1819466

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha