شیعہ اورسنی مسلمان امریکہ نواز عرب حکام سے متنفر اور بیزارہیں

شیعہ اور سنی مسلمان امریکہ اور اسرائیل نوازعرب ڈکٹیٹر حکمرانوں آل سعود اور آل خلیفہ سے سخت متنفر اور بیزار ہیں اور عرب ڈکٹیٹروں حکام کوامریکہ نواز اورخیانتکار سمجھتے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کی اردو سروس کے مطابق مشرق وسطی اور شمال افریقہ میں عوامی انقلاب کی شیعہ اور سنی مسلمان بھرحمایت کرتے ہیں کیونکہ یہ انقلابی لہر ان عرب ڈکٹیر حکمرانوں کے خلاف ہے جنھوں اسلام اور مسلمانوں  کے ساتھ زبردست خیانت کا ارتکاب کیا اورجو علاقہ میں امریکہ اور اسرائیل کے مفادات کی حفاظت کررہے ہیں آج مسلمان بیدار ہوچکے ہیں انھیں مغرب نواز حکمرانوں کی شناخت ہوچکی ہے وہ جانتے ہیں اسرائیل کے سامنے گردن جھکانے والے عرب حکمرانوں نے ہمیشہ اسلام اور مسلمانوں کے ساتھ خیانت کی ہے عرب حکمرانوں نے کبھی بھی فلسطینیوں کی عملی طور پر حمایت نہیں کی سعودی عرب کی امریکہ نواز پالیسی سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ خادم الحرمین کا لقب اختیار کرنے والے آل سعود خائن الحرمین ثابت ہوئے ہیں ۔ سعودی عرب نے بحرین کے پر امن مظاہرین کو کچلنے کے لئے اپنی فوج روانہ کی ہے جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ آل سعود و آل یہود امریکی اشاروں پر کام کررہا ہیں سعودی  سپاہی اسرائیلیوں کے خلاف جنگ میں حصہ نہیں لیتے بلکہ سعودی سپاہیوں کو اسرائیلی سپاہیوں کی طرح مسلمانوں کو کچلنے کے لئے آمادہ کیا گیا ہے اور یہ بات  درست ہے کہ جس طرح بیت المقدس یہودیوں کے قبضہ میں ہے اسی طرح آج حرمین شریفین سعودی یہودیوں کے قبضہ میں ہیں اور مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ آل سعود و یہود کے مکر و فریب کے خلاف اور علاقہ میں امریکہ اور اسرائیل نواز عرب حکام کے خلاف متحد ہو کر آواز بلند کریں اور ظالم عرب حکام کے خلاف سیسہ پلائی ہوئی دیوار کے مانند کھڑے ہوجائیں اور علاقہ کے مظلوم عوام کا ساتھ دیں بحرین میں سعودی مداخلت پر ع المی اور علاقائی سطح پر سعودی عرب کی مذمت جاری ہے اور انسانی حقوق کی تنظیم نےسعودی عرب کی طرف سے قطیف اور دیگر علاقوں میں عوامی مظآہروں کو کچلنے اور بحرین میں آل سعود اور آل خلیفہ کی بربریت اور سفاکی کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

News Code 1276345

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 12 =