برطانیہ کے وزیرِ اعظم  پارٹی شکست کے بعدعہدے سےمستعفی // ڈیویڈ کیمرون نئے وزیر اعظم منتخب

برطانیہ کے وزیرِ اعظم گورڈن براؤن نےپارلیمانی انتخابات میں پارٹی کی شکست کے بعد بطور لیبر رہنما اور وزیرِ اعظم کے عہدے سے فوری طور پر استعفیٰ دے دیا ہے اور کنزرویٹیو پارٹی کے رہنما ڈیویڈکیمرون برطانیہ کے نئے وزیر اعظم بن گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ برطانیہ کے وزیرِ اعظم گورڈن براؤن نےپارلیمانی انتخابات میں پارٹی کی شکست کے بعد بطور لیبر رہنما اور وزیرِ اعظم کے عہدے سے فوری طور پر استعفیٰ دے دیا ہےاور کنزرویٹیو پارٹی کے رہنما ڈیویڈکیمرون برطانیہ کے نئے وزیر اعظم بن گئے ہیں۔۔

وزیرِ اعظم برآؤن اپنا عہدہ اب برطانیہ کی ملکہ کو پیش کریں گے۔ انھوں نے یہ اعلان ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ گزشتہ روز انھوں نے کہا تھا کہ وہ اگلے چار ماہ میں اپنے عہدے ست مستعفی ہو جائیں گے۔اس سے قبل ایسی اطلاعات تھیں کہ کنزرویٹو پارٹی اور لبرل ڈیموکریٹس کے درمیان معاہدہ طے پا گیا جس کے تحت برطانیہ میں اب مخلوط حکومت ہوگی۔

اس سے قبل برطانیہ کی حکمران جماعت لیبر پارٹی نے لگ بھگ یہ بات تسلیم کر لی تھی کہ لبرل ڈیموکریٹس کے ساتھ مخلوط حکومت بنانے کی اس کی وہ کوششیں جو کل شروع ہوئی تھیںناکام ہوگئی ہے۔

News Code 1081661

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 3 =