عراقی پارلیمنٹ کا شہید کمانڈروں کے قتل کی تحقیقات کے نتائج کو ظاہر کرنے کا مطالبہ

عراقی پارلیمنٹ کی سلامتی اور دفاعی کمیٹی نے عراقی وزیر اعظم سے شہید میجر جنرل حاج قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی المہندس کے قتل کی تحقیقات کے نتائج کو منظر عام پر لانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراقی پارلیمنٹ کی سلامتی اور دفاعی کمیٹی نے عراقی وزیر اعظم مطفی الکاظیم سے شہید میجر جنرل حاج قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی المہندس کے قتل کی تحقیقات کے نتائج کو منظر عام پر لانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

عراقی پارلیمنٹ کی سلامتی اور دفاعی کمیٹی کے رکن احمد الموسوی نے العہد کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ عراقی پارلیمنٹ کی سلامتی اور دفاعی کمیٹی نے عراقی وزیر اعظم مصطفی الکاظمی سے تحقیقاتی رپورٹ کو شائع‏ کرنے اور پارلیمنٹ میں پیش کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ رپورٹ شائع‏ کرنے میں تاخير کی وجہ سے سب حیران ہیں۔

انھوں نے کہا کہ تحقیقات کے نتائج سے پارلیمنٹ کو آگاہ کرنا ضروری ہے۔  الموسوی نے کہا کہ عراقی حکومت کو بغداد ايئر پورٹ پر ہونے والے بہیمانہ حملے میں ملوث افراد کے نام ظاہر کرنا چاہییں تاکہ انھیں کیفر کردار تک پہنچایا جاسکے۔ واضح رہے کہ ایرانی سپاہ قدس کے سربراہ میجر جنرل قاسم سلیمانی ، عراق کی حشد الشعبی کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس اور ان کے ہمراہ 8 افراد کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حکم پر 3 جنوری سن 2020 کوبغداد ايئر پورٹ پر ایک ڈرون حملے میں شہید کردیا گیا تھا۔ شہید میجر جنرل سلیمانی عراقی حکومت کی سرکاری دعوت پر بغداد ايئر پورٹ پہنچے تھے شہداء بغداد کے قتل میں بغداد ايئر پورٹ کے کچھ اہلکار ملوث ہیں جنھوں نے امریکہ کو میجر جنرل سلیمانی کی بغداد ايئر پورٹ پر پہنچنے کی اطلاعات فراہم کی تھیں۔

News Code 1911245

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 13 =