طالبان کا امریکہ کو یکم مئی تک افغانستان سے فوجی عدم انخلا پر سخت انتباہ

طالبان نے امریکہ کو خبردار کیا ہے کہ اگر امریکہ نے امن معاہدے کے تحت یکم مئی تک افغانستان سے فوجی انخلا نہ کیا تو اسے سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی خامہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ طالبان نے امریکہ کو خبردار کیا ہے کہ اگر امریکہ نے امن معاہدے کے تحت یکم مئی تک افغانستان سے فوجی انخلا نہ کیا تو اسے سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔اطلاعات کے مطابق روسی دارالحکومت ماسکو میں طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے پریس کانفرنس میں امریکہ کو " امن معاہدے" کی پاسداری کے لیے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر افغانستان سے رواں برس یکم مئی تک غیر ملکی افواج کے انخلا کا عمل مکمل نہ ہوا تو امریکہ سنگین نتائج کے لیے تیار رہے۔

طالبان ترجمان  نے مزید کہا کہ امید ہے نئے امریکی صدر معاہدے سے انحراف نہیں کریں گے اور افغانستان سے اپنی اور نیٹو افواج کو مقررہ تاریخ تک واپس بلالیں گے تاکہ ہم افغانستان کے مسئلے کے حل اور پُرامن تصفیہ کے متفقہ سیاسی روڈ میپ تک پہنچ سکیں جس سے ایک مستقل اور جامع جنگ بندی ممکن ہوسکتی ہے۔

سہیل شاہین نے امریکی صدر جوبائیڈن کے فوجی انخلا کی آخری تاریخ میں توسیع کے امکان کے جواب میں کہا کہ  یکم مئی کے بعد بھی امریکی فوجیوں کا انخلا نہ ہوا تو یہ معاہدے کی خلاف ورزی تصور ہوگا اور پھر ہم بھی معاہدے سے آزاد ہوں گے۔

News Code 1905747

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 0 =