شہید فخری زادہ کے بہیمانہ اور بزدلانہ قتل کا جواب دیا جائےگا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر دفاع نے کہا ہے کہ ایران کے ممتاز اور نامور سائنسداں شہید محسن فخری زادہ کے بہیمانہ اور بزدلانہ قتل کا جواب دیا جائےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر دفاع جنرل امیر حاتمی نے کہا ہے کہ ایران کے ممتاز اور نامور سائنسداں شہید محسن فخری زادہ کے بہیمانہ اور بزدلانہ قتل کا جواب دیا جائےگا۔ ایرانی وزیر دفاع نے شہید فخری زادہ کی تشییع جنازہ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی عوام کے مختلف طبقات شہید فخری زادہ کی تشییع جنازہ میں شرکت کے متمنی تھے لیکن کورونا وائرس کی وجہ سے ہم عوام کی اس تمنا اور آرزو کو پورا نہ کرسکے ۔ انھوں نے کہا کہ شہید محسن فخری زادہ کی تشییع جنازہ ایرانی قوم سے متعلق ہے۔

ایرانی وزیر دفاع نے کہا کہ ہم آج ایسی شخصیت کی تشییع جنازہ میں شریک ہیں جس نے جوانی میں اپنے خدا سے ایرانی قوم کی سرافرازی اور سربلندی کے لئےعہد و پیمان کیا اور اپنی آخری سانس تک اپنے اس عہد و پیمان پر باقی رہے۔ انھوں نے ایران کے دفاعی استقلال کے سلسلے میں گرانقدر خدمات انجام دیں اور بہترین شاگرد تیار کئے ہیں جو شہید فخری زادہ کے راستے پر گامزن رہتے ہوئے ایران کو علمی اور دفاعی پیشرفت کے شعبہ میں اعلی ترین مقام تک پہنچائیں گے۔

ایرانی وزیر دفاع نے کہا کہ شہادت مردان حق کا شیوہ ہے اگر دشمن نے اس بزدلانہ حرکت کو انجام نہ دیا ہوتا تو شاید وہ گمنامی کی حالت میں دنیا سے رخصت ہوجاتے لیکن اللہ تعالی نے ان کی گرانقدر خدمات کے سلسلے میں انھیں شہادت کا درجہ عطا کیا۔ امیر حاتمی نے کہا کہ شہید فخری زادہ ہمارے لئے ملک کی علمی پیشرفت ، اخلاص اور دیگر امور میں بہترین نمونہ عمل ہیں۔

انھوں نے کہا کہ شہید فخری زادہ کے خون کا بدلہ لیا جائےگا ۔ شہید فخری زادہ نے درجہ شہادت پر فائز ہوکر امریکہ اور اسرائیل کے گھناؤنے منصوبوں کو دنیا کے سامنے پیش کردیا جس سے ثابت ہوتا ہے کہ امریکہ اور اسرائیل عالمی دہشت گردی کے اصلی بانی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ امریکہ اور اسرائیل کے پاس ہزاروں ایٹمی ہتھیار موجود ہیں انھوں نے ان ایٹمی ہتھیاروں کو کس کے لئے تیار کیا ہے؟ کیا وہ ان ایٹمی ہتھیاروں کو اپنے گھروں کی زینت بنائیں گے؟۔ ایرانی عوام بابصیرت ہیں اور انھیں اپنے دشمنوں کی گھناؤنی سازشوں کے بارے میں اچھا خاصا علم ہے۔ ایران کو امریکہ اور اسرائیل سے خطرہ ہے لہذا ایران کو اپنا دفاع مضبوط بنانے کا حق حاصل ہے اور ہم ایران کی علمی اور دفاعی پیشرفت کے سلسلے میں کسی سے مذاکرات نہیں کریں گے۔

News Code 1904168

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha