بھارتی جج نے عمر عبداللہٰ کی درخواست کی سماعت سے معذرت کرلی

مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کی غیر قانونی حراست کی درخواست پر سماعت کرنے والے تین رکنی بنچ میں سے ایک جج نے معذرت کرتے ہوئے خود کو سماعت سے علیحدہ کرلیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کی غیر قانونی حراست کی درخواست پر سماعت کرنے والے تین رکنی بنچ میں سے ایک جج نے معذرت کرتے ہوئے خود کو سماعت سے علیحدہ کرلیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ میں سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ پر پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کے نفاذ کے خلاف درخواست کی سماعت کرنے والے بنچ سے ایک جج کے علیحدہ ہوجانے کے بعد اب درخواست کی سماعت کل ہوگی۔ مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کی بہن نے اپنے بھائی پر لاگو کیے گئے پی ایس اے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہوا ہے، درخواست کے متن کے مطابق عمرعبداللہ کی پی ایس اے کے تحت گرفتاری غیر قانونی ہے۔ واضح رہے کہ بھارتی حکومت نے 5 فروری کو کشمیر کے سابق وزارء اعلی عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی پر پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کیا تھا، دونوں کشمیری رہنما مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے زیر حراست ہیں۔

News Code 1897777

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =