ایران خطے میں امن و سلامتی کا خواہاں ہےکشیدگی کا نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد آل ثانی کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران خطے میں امن و سلامتی کا خواہاں ہےکشیدگی کا نہیں، لیکن اگر ایران کے خلاف کوئی احمقانہ اقدام کیا گیا تو منہ توڑ جواب دیا جائےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے قطر کے بادشاہ کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران خطے میں امن و سلامتی کا خواہاں ہےکشیدگی کا نہیں، لیکن اگر ایران کے خلاف کوئی احمقانہ اقدام کیا گیا تو منہ توڑ جواب دیا جائےگا۔ صدر حسن روحانی نے امیر قطر کو عید سعید فطر کی مناسبت سے مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ خطے کے مسائل کا حل  عسکری اور فوجی نہیں ، ایران قطر کے خلاف بعض عرب ممالک کے معاندانہ اقدام  اور فضائی ، دریائی اور زمینی محاصرے کی مذمت کرتا ہے۔ صدر روحانی نے کہا کہ ایران مشکل کی گھڑی میں قطر کے ساتھ کھڑا  ہے ۔ صدر حسن روحانی نے مکہ میں عرب لیگ اور خلیج فارس تعاون کونسل میں قطر کے مؤقف کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ دونوں اجلاس میں قطر کا مؤقف اچھے ہمسایہ کا مظہر اور اچھی نیت  پر مبنی تھا۔صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایسے اجلاسز کی ناکامی واضح ہے جو علاقائی ممالک کو ایکدوسرے کے قریب لانے کے بجائے ان میں اختلاف اور تفریق پیدا کرے۔

صدر روحانی نے کہا کہ کویت پر صدام کے قبضہ ، یمن پر سعودی عرب کے حملے اور قطر کے محاصرے کے بارے میں ایران کے ٹھوس مؤقف سے واضح ہوتا ہے کہ ایران خطے میں امن و سلامتی کا خواہاں ہے۔

قطر کے بادشاہ شیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے بھی ٹیلیفون پر صدر حسن روحانی کو عید فطر کی مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ قطر خطے میں کشیدگی کے خلاف ہے اور باہمی مسائل کو مذاکرات کے ذریعہ حل کرنے کا خواہاں ہے۔

شیخ تمیم نے ایران اور قطر کے تعلقات کو تاریخی قراردیتے ہوئے کہا کہ  قطر کے خلاف  4 عرب ممالک کےظالمانہ محاصرے کے بارے میں ایران کے منصفانہ مؤقف کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

News Code 1891124

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 7 =