ایران کی کابل میں سیاسی تقریب پر دہشتگردانہ حملے کی شدید مذمت

اسلامی جمہوریہ ایران نے افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک سیاسی تقریب پر دہشتگردانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے.

مہر خبررساں ایجنسی نے ارنا کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک سیاسی تقریب پر دہشتگردانہ حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے.

ترجمان دفترخارجہ بہرام قاسمی نے اپنے بیان میں کابل میں ایک تقریب پر خودکش حملے کی مذمت کی ہے جس میں افغانستان کی حکومتی اور سیاسی شخصیات شریک تھیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ داعش سمیت دہشتگرد گروہوں کی ایسی کاروائیوں کا مقصد افغان عوام اور حکومت کے درمیان تفرقہ ڈالنا ہے۔ قاسمی نے کہا کہ داعش کو پہلے ہی شام اور عراق میں شکست مل چکی ہے اور اب اس کی یہ سازش ہے کہ افغانستان میں غیرانسانی اقدامات کے ذریعے اپنی ناکامی کو ازالہ کرے مگر اس سازش کو افغانستان کی قوم اور حکومت کے درمیان باہمی تعاون اور یکجہتی سے شکست دی جاسکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ افغان قوم اور حکومت اپنی سرزمین سے دہشتگردی کے خاتمے کے لئے پُرعزم ہیں اور ہمیں یقین ہے کہ افغانستان اس مقصد میں کامیاب ہوگا اور یہی ایران کی بھی خواہش ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز کابل میں حزب وحدت پارٹی کے رہنماء عبد العلی مزاری کی برسی کی تقریب جاری تھی کہ دہشت گردوں نے حملہ کردیا، اس واقعے میں 3 افراد جاں بحق اور 22 زخمی ہوگئے۔ داعش نے اس کاروائی کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

News Code 1888674

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =