طالبان کی روس میں ہونے والے مذاکرات میں شرکت پر رضا مندی

روس کا کہنا ہے کہ طالبان نے آئندہ ماہ روسی دارالحکومت ماسکو میں ہونے والے مذاکرات میں شمولیت کی دعوت قبول کرلی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے روسیا الیوم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ روس کا کہنا ہے کہ طالبان نے آئندہ ماہ روسی دارالحکومت ماسکو میں ہونے والے مذاکرات میں شمولیت کی دعوت قبول کرلی ہے۔ ان مذاکرات کا اعلان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب طالبان پورے افغانستان میں اپنے قدم جمانے کے لیے کوشاں ہیں اور انہوں نے حال ہی میں سب اہم شہر غزنی میں حملہ کیا تھا۔

روسی وزیرِ خارجہ سرگئی لاروف کا کہنا ہے کہ ماسکو نے طالبان کو 4 ستمبر کو ہونے والے مذاکرات میں دعوت دی ہے اور امید ہے کہ یہ بات چیت مثبت ہوگی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ طالبان کی جانب سے مثبت جواب سامنے آیا ہے اور یہ ان مذاکرات میں حصے لینے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ تاہم افغان طالبان کی جانب سے اس حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔ روسی وزیرِ خارجہ نے اپنے اقدام کی وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ماسکو کا طالبان سے رابطے کا مقصد افغانستان میں روسی شہریوں کی حفاظت کو یقینی بنانا ہے جبکہ یہ طالبان کے لیے حوصلہ افزائی ہے کہ وہ عسکریت پسندی چھوڑ کر حکومت کے ساتھ مذاکرات میں شامل ہوجائیں۔

News Code 1883288

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 15 =