کراچی میں چاقو کے حملے میں 5خواتین زخمی

پاکستان کے شہر کراچی میں خواتین پر چاقو سے حملے کے واقعات میں اچانک تیزی آ گئی اور حملہ آور نے دو گھنٹوں کے دوران کراچی کے مختلف علاقوں میں مزید 5 خواتین کو زخمی کر دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکسریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے شہر کراچی میں خواتین پر چاقو سے حملے کے واقعات میں اچانک تیزی آ گئی اور حملہ آور نے دو گھنٹوں کے دوران کراچی کے مختلف علاقوں میں مزید 5 خواتین کو زخمی کر دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق کراچی میں تیز دھار آلے سے حملے گلستان جوہر کے بعد دیگر علاقوں میں بھی پھیل گئے ہیں اور موٹر سائیکل پر سوار حملہ آور نے دو گھنٹوں کے دوران مختلف علاقوں میں 5 خواتین کو زخمی کر دیا۔ذرائع کے مطابق تازہ ترین حملہ گلشن چورنگی کے قریب ہوا جس کے نتیجے میں زخمی ہونے والی خاتون کو طبی امداد کیلئے عباسی شہید اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ پہلا حملہ گلشن جمال میں کیا گیا جس میں سونیا نامی لڑکی زخمی ہوئی، دوسرا حملہ راشد منہاس روڈ پر نورین اور تیسرا حملہ نیپا چورنگی کے قریب عریشہ نامی لڑکی پر کیا گیا۔ نیپا چورنگی کے قریب زخمی ہونے والی عریشہ اردو یونیورسٹی کی طالبہ ہے۔ حملوں میں زخمی ہونے والی خواتین کو طبی امداد کے لئے مختلف اسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا ہے۔خواتین پر حملوں کی چوتھی واردات گلشن اقبال کے علاقے میں ہوئی جہاں درندہ صفت حملہ آور نے 13 سالہ بچی کو گھر کے قریب نشانہ بنا کر زخمی کیا۔ متاثرہ لڑکی کی والدہ کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی کی کمر پر زخم آئے ہیں جسے طبی امداد کیلئے جناح اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ایس پی گلشن اقبال کے مطابق تینوں خواتین کو تیز دھار آلے سے زخمی کیا گیا اور یہ واقعات نیپا چورنگی، راشد منہاس روڈ اور ڈالمیا کے قریب پیش آئے۔ واضح رہے کہ خواتین پر تیز دھار آلے سے پہلا حملہ گزشتہ ماہ 25 ستمبر کو گلستان جوہر کے علاقے میں ہوا تھا اور اس کے بعد سے اب تک خواتین پر حملوں کے 11 واقعات ہو چکے ہیں۔

News Code 1875735

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 3 =