پاکستان سپریم جوڈیشل کونسل نے جسٹس سومرو کے خلاف دائر ریفرنس صدر کو بھیج دیا ہے

پاکستان سپریم جوڈیشل کونسل نے سندھ ہائی کورٹ کے سابق سربراہ جسٹس افضل سومرو کو خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف دائر ریفرنس صدر پاکستان کو بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان سپریم جوڈیشل کونسل نے سندھ ہائی کورٹ کے سابق سربراہ جسٹس افضل سومرو کو خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف دائر ریفرنس صدر پاکستان کو بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے۔سنیچر کو اسلام آباد میں سپریم جوڈیشل کونسل کے اجلاس میں جسٹس محمد افضل سومرو کے خلاف دائر دو ریفرنسز کی سماعت ہوئی۔یہ سپریم جوڈیشل کونسل کا چوتھا اجلاس تھا لیکن آج بھی جسٹس افضل سومرو اس میں پیش نہیں ہوئے۔ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں رجسٹرار سندھ ہائی کورٹ کا موقف سننے کے بعد ریفرنس صدر کو بھجوانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس اجلاس میں سپریم کورٹ کے جسٹس جاوید اقبال ، جسٹس سردار محمد رضا، پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس طارق پرویز ، لاہور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس خواجہ محمد شریف اور سپریم جوڈیشل کونسل کے سیکرٹری نے شرکت کی۔ جسٹس افضل سومرو کے خلاف یہ کارروائی آئین کے آرٹیکل (چھ) دو سو نو کے تحت کی گئی ہے۔جسٹس افضل سومرو کے خلاف عدالتی ریکارڈ میں ردو بدل کرنے اور فریقین کو سنے بغیر فیصلہ سنانے جیسے الزامات تھے۔
News Code 957611

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 11 =