پاکستان میں تعلیمی اداروں کو 15 جولائی تک بند رکھنے کا فیصلہ

پاکستان کی وفاقی حکومت نے ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے اسکولز، یونیورسٹیز سمیت تمام تعلیمی اداروں کو 15 جولائی تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی وفاقی حکومت نے ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے اسکولز، یونیورسٹیز سمیت تمام تعلیمی اداروں کو 15 جولائی تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔  قومی رابطہ کمیٹی(این سی سی) اجلاس کے بعد وزیراعظم اور دیگر وفاقی وزرا کے ہمراہ گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا کہ جب کورونا وائرس کی وبا پھیلی تو ہمیں طلبہ کی صحت کا مکمل خیال کرنے اور تعلیم کا سلسلہ جاری رکھنے کی ہدایت کی گئی تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے صوبوں کی مشاورت سے تمام تعلیمی اداروں کو 31 مئی تک بند کرنے اور تمام امتحانات کو ملتوی کرتے ہوئے جون اور جولائی میں منعقد کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ہم نے مارچ کے اوائل میں یہ فیصلے کیے اور وزیراعظم کی ہدایت کے مطابق ٹیلی تعلیم کا سلسلہ شروع کرتے ہوئے ٹی وی چینل کے ذریعے تعلیم کا سلسلہ بھی جاری رکھا۔

شفقت محمود نے کہا کہ وقت گزرنے کے ساتھ مذکورہ اقدامات پر نظرثانی کا فیصلہ بھی کیا گیا تھا اور 2 دن قبل بین الصوبائی وزرا کا اجلاس منعقد ہوا تھا جس میں دو چیزوں پر فیصلے ہوئے تھے جنہیں پہلے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی ) اور آج (7 مئی کو) این سی سی اجلاس میں پیش کرنے کے بعد ان کی منظوری دی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ اسکولز، یونیورسٹیز اور دیگر تمام تعلیمی ادارے یکم جون کو کھلنے کے بجائے اب 15 جولائی تک بند رہیں گے۔

News Code 1900004

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 1 =