امریکی عدالت نے داعشی خاتون کا پاسپورٹ منسوخ کرنے کی توثیق کردی

امریکہ کی ایک وفاقی عدالت نے امریکی حکومت کی طرف سے داعش سے تعلق رکھنے والی خاتون ہدیٰ المثنیٰ کے بارے میں سنائے گئے فیصلے کی توثیق کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ہدیٰ امریکی شہری نہیں ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے العربیہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ کی ایک وفاقی عدالت نے امریکی حکومت کی طرف سے داعش سے تعلق رکھنے والی خاتون ہدیٰ المثنیٰ کے بارے میں سنائے گئے فیصلے کی توثیق کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ہدیٰ امریکی شہری نہیں ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ہدیٰ المثنیٰ نیو جرسی میں ایک عرب سفارتکار کے ہاں پیدا ہوئی تھیں جب کہ ان کی پرورش الاباما میں ہوئی۔ کچھ عرصہ پیشتر ہدیٰ نے شام میں داعش میں شمولیت اختیار کر لی تھی۔ ہدیٰ کے بیرون ملک رہنے کی وجہ سے امریکی حکومت نے فیصلہ کیا تھا کہ وہ امریکی شہری نہیں ہے کیونکہ جب وہ پیدا ہوئی تو اس وقت ان کے والد امریکی شہری نہیں بلکہ ایک غیر ملکی سفارت کار تھے۔ حکومت نے ہدیٰ کا پاسپورٹ منسوخ کر دیا تھا۔

واضح رہے کہ امریکہ اور یورپی ممالک نے پہلے اپنے شہریوں کو داعش میں بھرتی ہونے کی ترغیب کی اور انھیں ترکی میں قائم کیمپ تربیت بھی دی جاتی رہی ہے داعش دہشت گردوں کو امریکہ ، سعودی عرب اور ترکی نے شام میں داخل ہونے کے سلسلے میں سہولیات بھی فراہم کیں ۔ لیکن اب امیرکہ نے القاعدہ کی طرح داعش کی پشت بھی خالی کردی ہے۔

News Code 1895438

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 3 =